Stop Preparing For Hajj Due to Coronavirus: Saudi Govt

218

Saudi Minister for Hajj said that muslims should stop preparing for Hajj as there is greater uncertainty due to coronavirus. Coronavirus is spreading in Holy cities of Madina and Mecca that why Saudi Officials asked Muslims to stop preparing for Hajj.

Why Stop Preparing for Hajj

کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے رحجان کی وجہ سے سعودی حکومت یہ کہنے پر مجبور ہے کہ مسلمان عرضی طور پر حج کی تیاریاں ملتوی کر دیں۔ اس ماہ کے شروع میں وائرس کے مقدس شہروں مکہ اور مدینہ میں پھیلاؤ کی ڈر سے عمرہ کی ادائیگی ملتوی کر دی تھی۔ جسکی وجہ سے مسلمانوں میں حج کے حوالے سے غیر یقینی کی صورت حال موجود تھی۔

Read: Challenges With Coronavirus Vaccine

بروز منگل سعودی وزیر حج نے سعودی عرب کے سرکاری ٹی وی سے بات کرتے ہوئے واضح کیا کہ ” سعودی حکومت حج اور عمرہ کرنے والوں کی خدمت میں ہر وقت تیار ہے۔ لیکن اس وقت پوری دنیا کو جس خطرناک اور مہلک وائرس کا سامنا ہے اس کے پیش نظر ہم مسلمانوں کو یہ کہنے پر مجبور ہیں کہ ابھی وہ حج کے معاہدے نہ کریں۔”

Read: What Is Coronavirus : Symptoms And Protection

Read: Top 10 Best T20 All-rounders 2020 – Latest ICC Rankings

سعودی حکام کا کہنا تھا کہ ایسا وہ تمام مسلمانوں کو تحفظ سینے کی خاطر کر رہے ہیں۔ اور ابھی وہ حج کہ تیاریاں ملتوی کر دیں ۔ اور اس کے ساتھ ساتھ سعودی حکام کا کہنا تھا کہ جولائی کے اختتام پر اس سال حج کا شیڈول دیا جائے گا۔

یاد رہے کہ حج سے آنے والی آمدنی سعودی حکومت کے لیے آمدنی کا بہت بڑا ذریعہ بھی ہے۔ پچھلے سال اس مقدس فریضے کو 5۔2 ملین مسلمانوں نے سر انجام دیا تھا۔

Read: Coronavirus Updates in Pakistan

اس ماہ کے آغاز میں سعودی حکومت نے مساجد کے اندر نماز ادا کرنے سے بھی منع کر دیا تھا۔ یہ سب اقدامات ملک میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کیے جا رہے ہیں۔ سعودی عرب میں اب تک 1563 افراد اس وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں اور 10 افراد اس کی وجہ موت کے منہ میں جا چکے ہیں۔

Read: Maya Ali’s Contribution To Coronavirus Situation

Read: Top 10 Richest People 2020 – World’s billionaires